پاک فوج کی بہادری بے مثال تھی مگر ڈھاکہ میں جنرل نیازی نے ہتھیار اس لیے ڈالے کہ

پاک فوج کی بہادری بے مثال تھی مگر ڈھاکہ میں جنرل نیازی نے ہتھیار اس لیے ڈالے کہ کیونکہ ۔ ۔ برسوں بعد بھارتی جرنیل مانک شاہ کے کڑوے انکشافات۔

بھارت کے جنرل مانک شا پارسی تھے انہوں  نے 28 اکتوبر 1999ء میں ٹی وی پر ایک انٹرویو دیا تھا اس انٹرویو کے نو سال بعد 94 سال کی عمر میں ان کا انتقال ہوا تھا۔ 1971ء کی جنگ میں جب بھارتی افواج نے بنگلہ دیش میں پاکستان کو شکست دیتو مانک شا اس وقت چیف آف آرمی سٹاف تھے۔

یہ بھی پڑھیں: سکندر اعظم پوری دنیا فتح کرنے نکل پڑالیکن اس کے ناقابل شکست کے پیچھے چھپا راز تاریخ کا ایک اہم ورق

کرن تھاپر کے ایک سوال کا جواب جو مانک شا نے دیا اس  نے ان کروڑوں لوگوں کو ششدر کردیا جو اس وقت ٹی۔وی پر ان کا انٹرویو دیکھ رہے تھے۔ کرن تھاپر نے پوچھا کہ فیلڈمارشل صاحب آپ کو یہ جنگ جیتنے کا کتنا کریڈٹ جاتا ہے کیونکہ پاکستانی فوج نے وہ بہادری نہیں دکھائی جس کی ان سے توقع کی جارہی تھی۔فیلڈمارشل مانک شا  نے کہا، یہ بات غلط تھی۔ پاکستانی فوج بڑی بہادری سے ڈھاکا میں لڑی تھی لیکن ان کے جیتنے کا کوئی امکان نہیں تھا۔ وہ اپنے مرکز سے ہزاروں میل دور جنگ لڑ رہے تھے جبکہ میں نے اپنی ساری جنگی تیاریاں آٹھ سے نو میل کے علاقے میں کرنا تھیں۔ ایک پاکستانی فوجی کے مقابلے میں میرے پاس پندرہ بھارتی فوجی تھے لہٰذا اپنی تمام تر بہادری کے باوجود پاکستانی فوج یہ جنگ نہیں جیت سکتی تھی۔

یہ بھی پڑھیں: بنی اسرائیل خدا کی سب سے نافرمان قوم تھے، ایک ایسا واقعہ جو یہودیوں پر قہر کا سبب بنا

کرن تھاپرنے اگلا سوال کیا کہ  فیلڈمارشل ہم نے کوئی کہانی سنی ہے کہ پاکستانی فوج کا ایک کیپٹن احسان ملک تھا جس نے کومان پل کے محاذ پر بھارتی فوجیوں کے خلاف اتنی ناقابلِ یقین بہادری دکھائی کہ آپ نے جنگ کے بعد بھارتی فوج کا چیف آف آرمی سٹاف ہوتے ہوئے اسے ایک خط لکھا جس میں اس کی بہادری اور اپنے ملک کے لیے اتنے ناقابل یقین انداز میں لڑنے پر اسے خراجِ تحسین پیش کیا گیا تھا۔ مانک شا نے کہا کہ یہ بات بالکل سچ ہے۔ بھارتی افواج ڈھاکا کی طرف پیش قدمی کررہی تھیں اور یہ پاکستانی کیپٹن ہماری فوج کے آگے دیوار بن کر کھڑا ہوگیا۔ اس اکیلے نے محاذ پر موجود بھارتی فوج کومشکلات میں مبتلا کرنا شروع کیا۔ ایک زوردار حملہ کیا گیا جو اس نے اپنی حکمت عملی کی بدولت پسپا کیا۔ دوبارہ پہلے سے بھی بڑی حملہ کیا گیا لیکن کیپٹن احسان ملک نے انھیں ایک انچ بھی آگے نہیں آنے دیا۔ بھارتی فوج نے آخر اس محاذ پر تیسرا حملہ کیا تو تب کہیں جاکر انھیں کامیابی ہوئی۔ مانک شا بڑا حیران تھا کہ آخر اتنی بڑی بھارتی فوج کے حملے کے سامنے کون تھا جو شکست ماننے کوتیار نہیں تھا۔ انھیں بتایا گیا کہ یہ ایک کیپٹن احسان ملک تھا جس نے ان کی تمام کوششوں اور حکمتِ عملی کو ناکام بنا دیا تھا۔ معلوم نہیں وہ زندہ بچا یا لڑتا ہوا مارا گیا۔جنگ ختم ہوگئی۔ جنرل نیازی ہتھیار ڈال چکا تھا لیکن مانک شا کا دماغ کیپٹن احسان کی بہادری پر اٹکا ہوا تھا۔ ماک شا واپس بھارت اپنے آفس گیا تو وہاں نے اس نے ذاتی طور پر کیپٹن احسان  ملک کو ایک خط لکھا اور اپنے ملک کے اس بہادری سے لڑنے پر خراج تحسین پیش کیا۔

یہ بھی پڑھیں: فاٹا کے بارے میں پاک آرمی کیا کرنا چاہتی ہے آرمی چیف نے اہم اعلان کر دیا

مانک شا نے اسی انٹرویو کے دوران انکشاف کیا تھا کہ قائداعظم محمد علی جناحؒ نے انھیں بلا کر کہا تھا کہ آپ پاک فوج میں شامل ہو جائیں لیکن انھوں نے یہ کہہ کر معذرت کرلی کہ اب وہ بھارتی فوج کا حصہ تھےاور اپنے آپ کو بھارتی سمجھتے تھے ۔

About Us

pakistaninfopoint.com covers Latest Breaking News, Pakistan News, World News, Health News, Available Jobs Lists, students relating infomations and different kind of information about pakistan. pakistaninfopoint.com also cover Latest Technology Updates, Dubai and Saudi Arabia News.

© 2018 - Pakistan Info Point