سکندر اعظم پوری دنیا فتح کرنے نکل پڑالیکن اس کے ناقابل شکست کے پیچھے چھپا راز تاریخ کا ایک اہم ورق

سکندر اعظم پوری دنیا فتح کرنے نکل پڑالیکن اس کے ناقابل شکست کے پیچھے چھپا راز تاریخ کا ایک اہم ورق۔

سکندر-اعظم

سکندر 350 سے 10 جون 323 قبل مسیح تک مقدونیہ کا حکمران رہا۔ پوری دنیا کو فتح کرنا سکندر اعظم کے والد کا خواب تھا جو پورا نہ ہو سکا اسے اس کے دشمنوں نے قتل کرا دیا۔ اب یہ مشن سکندر پورا کرنے نکلا۔  اس کے علاوہ اس کے باپ “فلپس” نے اپنے بیٹے کی جسمانی تربیت پر بھی خصوصی توجہ دی اور اس کے لیے اسے شاہی محل سے دور ایک پر فضا مقام پر بھیج دیا تاکہ عیش و عشرت کی زندگی سے وہ سست نہ ہو جائے۔ یہاں سکندر نے جسمانی مشقیں بھی سیکھیں اور گھڑ سواری، نیزہ اور تلوار بازی میں مہارت بھی حاصل کی۔ ساتھ ہی ساتھ ارسطو اس کی ذہنی تربیت بھی کرتا رہا۔

یہ بھی پڑھیں: جب فرشتے کے پر نوچ کر اسے کوہ قاف پر پھینک دینے کا واقعہ

اس نے سب سے پہلے پورا یونان فتح کیا، اس کے بعد وہ ترکی میں داخل ہوا، پھر ایران کے دارا کو شکست دی، پھر وہ شام پہنچا، پھر اس نے یروشلم اور بابل کا رخ کیا، پھر وہ مصر پہنچا، پھر وہ ہندوستان آیا، ہندوستان میں اس نے پورس سے جنگ لڑی، اپنے عزیز از جان گھوڑے کی یاد میں پھالیہ شہر آباد کیا۔

یہ بھی پڑھیں: شاہ زیب قتل کیس میں سندھ ہائی کورٹ نے تمام سزائیں کالعدم قرار دے دیں

بحیرہ روم سے ہندوستان تک پھیلی ایران کی  سلطنت کا رقبہ لاکھوں میل تھا۔ اس میں دریا بھی تھے، پہاڑ بھی۔ صحرا بھی تھے اور جھیلیں بھی۔ غرض یہاں وہ سب کچھ موجود تھا جو کسی بھی علاقے کو خوش حال بنانے کے لیے ضروری ہے۔ یہی وجہ تھی کہ ایرانی سلطنت پوری نہیں تو آدھی دنیا کی حیثیت ضرور رکھتی تھی۔ یہاں تقریباً ہر رنگ اور ہر نسل کے لوگ آباد تھے۔  دریائے “گرانی کوس” پر سکندر کا سامنا ایک قدرے چھوٹے ایرانی لشکر سے ہوا۔ اس لشکر میں بیس ہزار سوار اور بیس ہزار ہی پیدل سپاہی تھے۔ پیادوں میں زیادہ تر یونانی نسل کے لوگ تھے

یہ بھی پڑھیں: طیارہ حادثے کے بعد بچ جانے والے مسافر 72 دن تک اپنے مرنے والے ساتھیوں کا گوشت کھا کر زندہ رہے

سکندر اعظم نے ایران کے بادشاہ دارا کو شکست دے کر اس کے وزراء اور خدمت گاروں کو قتل کروا دیا۔ سکندر کو بتایا گیا کہ دارا کی بیٹی نہایت حسین و جمیل ہے اور اس کے علاوہ اس کے شاہی حرم اور شاہی خاندان کی خواتین حسن نو جمال میں اپنی مثال نہیں رکھتیں۔ لہٰذا سکندر کو محل سرا کی سیر کرنے کا مشورہ دیا گیا۔ لوگوں کا خیال تھا کہ سکندر شہزادی کو دیکھے گا توہو سکتا  ہے اس کی خوبصورتی کو دیکھ کر اسے ملکہ بنا لے مگر سکندر نے جواب دیا’’ہم دارا کے شہہ زور مردوں کو شکست دے چکے ہیں۔ اب ہم یہ نہیں چاہتے کہ اس کی کمزور عورتیں ہمیں زیر کر لیں‘‘سکندر حرم سرا نہیں گیا اور نہ اس نے اپنے وزراء کو جانے دیا۔ سکندر نے دارا کے تین بڑے لشکروں کو شکست دی تھی اور سکندر کی فوج دارا کے لشکروں سے کہیں کم تھی لیکن وہ اپنی بہترین جنگی حکمت عملی اور عزم و ہمت کی وجہ سے تینوں دفعہ جیت گیا تھا۔سکندر اعظم نے آدھی دنیا کو فتح کیا تھا اس کی ذات پر دنیا کی ہر زبان میں کافی کام ہو چکا ہے جبکہ ہالی وڈ کی بے شمار فلمیں بھی سکندر اعظم پر بن چکی ہیں ۔

Comment

About Us

pakistaninfopoint.com covers Latest Breaking News, Pakistan News, World News, Health News, Available Jobs Lists, students relating infomations and different kind of information about pakistan. pakistaninfopoint.com also cover Latest Technology Updates, Dubai and Saudi Arabia News.

© 2017 - Pakistan Info Point