روحانی شخصیت بشری بی بی عرف پنکی کون ہے، عمران خان کا اس کے پاس کیوں آنا جانا تھا

bushra-bibi-pinki-پشری-بی-بی-پنکی

روحانی شخصیت بشری بی بی عرف پنکی کون ہے، عمران خان کا اس کے پاس کیوں آنا جانا تھا ۔ عمران خان کی تیسری شادی کا میڈیا خوب چرچا ہے ۔  کچھ لوگوں نے اس کو ایسے اچھالنا شروع کر دیا ہے جیسے کہ یہ گوئی گناہ یا جرم ہے ۔ شادی ایک مقدس فریضہ ہے ۔

اب یہ اہم سوال ہے جس خاتون سے عمران خان کی شادی کا چرچا ہے وہ ہے کون ۔ عمران خان کی پیرنی بشری بی بی المعروف پنکی بی بی ہی وہ خاتون ہیں جن سے عمران خان کے نکاح کی خبریں چل رہی ہیں اس نکاح کو روحانی واردات کہا جا رہا ہے۔ حالانکہ کہ ابھی تک اس نکاح کی باقاعدہ طور پر تصدیق نہیں ہو سکی ہے۔

بشریٰ بی بی جن کی عمر تقریبا 40 برس ہے ان کا تعلق پاکپتن کے وٹو خاندان کے ذیلی قبیلہ مانیکا  سے ہے انہوں نے حال ہی میں اپنے سابقہ شوہر خاور فرید مانیکا سے خلع لے لی ہے ۔خاور فرید مانیکا کسٹمز آفیسر ہیں اور ان کے والد غلام فرید مانیکا وفاقی وزیر رہے ہیں۔

ماضی میں عمران خان کے بشریٰ بی بی کی بہن سے شادی کی خبریں بھی اڑیں مگر یہ غلط ثابت ہوئیں
عمران خان روحانی شخصت بشریٰ بی بی کے عقیدت مند ہیں، بشریٰ بی بی کو علاقے میں مس پنکی کے نام سے جانا جاتا ہے۔  عمران خان جب بھی کسی مشکل میں گھرتے ہیں وہ  پاک پتن پہنچ جاتے ہیں ۔

عمران-خان-بابا-فرید-کے-دربار-پر
عائشہ گلالئی کے سنگین الزامات کے بعد عمران خان منظر عام سے غائب ہوئے، جس روز الزامات لگائے گئے اس روز رات کے وقت عمران خان بابا فرید الدین گنج شکر کے مزار میں موجود تھے۔  عمران خان کے ان دوروں کو عام طور پر خفیہ رکھا جاتا ہے۔
عمران خان اپنے ذاتی گارڈز کے ہمراہ رات کے اوقات میں اس قصبے کا دورہ کرتے ہیں اور بابا فریدالدین گنج شکر کے مزار پر جا کر انہیں خراج عقیدت پیش کرتے ہیں۔اس کے بعد وہ بااثر مانیکا قبیلے سے تعلق رکھنے والے اپنے میزبانوں کی رہائش گاہ پر چند گھنٹے گزارتے ہیں، جن کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ عمران خان کا ان سے روحانی تعلق ہے۔

عمران-خان-ریموٹ-گاؤں-میں
نعیم الحق گذشتہ سال عمران خان اور مانیکا گھرانے کے درمیان روحانی تعلقات کی تصدیق کرچکے ہیں روابط کی تصدیق پی ٹی آئی رہنما نعیم الحق نے گذشتہ سال اُس وقت کی تھی جب یہ افواہیں سامنے آئی تھیں کہ چیئرمین پی ٹی آئی نے پیر بشریٰ بی بی کی تجویز پر برطانیہ سے تعلق رکھنے والی ایک رشتے دار خاتون سے شادی کرلی ہے۔جس کے بعد نعیم الحق نے عمران خان کی تیسری شادی کی رپورٹس کی تردید کرتے ہوئے اپنی ٹوئیٹ میں اس بات کی تصدیق کی تھی کہ عمران خان اور مانیکا گھرانے کے آپس میں روحانی تعلقات ہیں۔

عمران خان نے پہلی بار 2015 میں این اے 154 (لودھراں) کے ضمنی انتخاب سے قبل بشریٰ بی بی سے ملاقات کی تھی۔

یہ بھی پڑھیں: امریکا پاکستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت بند کرے، پاکستان کی حمایت میں بڑی عالمی آواز آگئی

پاک پتن میں پی ٹی آئی کے سیکریٹری اطلاعات اظہر محمود خان کا کہنا تھا کہ عمران خان یکم اگست کی شام خاور فرید مانیکا کے گھر پہنچے، چند گھنٹے قیام کیا، بابا فریدالدین کے مزار کی زیارت کی اور اسلام آباد روانہ ہوگئے۔ذرائع کے مطابق عائشہ گلالئی کے الزامات کے بعد عمران خان کی پیر نے انہیں مزار کی زیارت کا مشورہ دیا تھا۔