خاتون نے دریا میں چھلانگ لگانے سے قبل خودکشی کی وجہ سسرال والوں کو قرار دے کر ویڈیو فیس بک پر اپلوڈ کر دی

خاتون-کی-دریا-میں-چھلانگ-خودکشی

خاتون نے دریا میں چھلانگ لگانے سے قبل خودکشی کی وجہ سسرال والوں کو قرار دے کر ویڈیو فیس بک پر اپلوڈ کر دی۔ خاتون نے خودکشی سے قبل بنائی گئی وڈیو میں اپنے سسرال والوں کو اس خود کشی کا ذمہ دار ٹھہرا دیا۔

طالبان نے افغان دارالحکومت کو ہلاکر رکھ دیا،تباہ کن حملہ، بدترین قتل عام،چن چن کر غیرملکیوں کا قتل،ہلاکتوں کی تعداد میں تشویشناک اضافہ

بھارت  کانپور کی رہائشی 30سالہ جسلین کور نے خود کشی کرنے سے پہلے ایک ویڈیو بنائی اور اس وڈیو میں اپنی خودکشی کی وجہ بتاتے ہوئے اپنے ساس اور سسر کو اس کا ذمہ دار ٹھہرا اور پھر اسے سوشل میڈیا پر شیئر کر کے  دریا میں چھلانگ لگا دی۔ اس کا کہنا تھا کہ وہ اپنے سسرال والوں کے نہیں رہ سکتی اس لیے وہ خود کشی کر رہی ہے۔

مسوں کا عام گھریلو علاج

وڈیو اپ لوڈ  کرنے کے بعد جسلین کو ر نے دریا میں چھلانگ لگا دی اور پھر سب سے پہلے اس وڈیو کی اس کے ایک رشتہ دار نے دیکھا۔ لیکن جب خاتون کو دریا سے نکال کر لالہ لاج پات رائی ہسپتال لایا گیا تو ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دے دیا ہوا تھا۔ اس کا 4 سال کا بیٹا بھی ہے تاہم اس کے شوہر کا کہنا ہے وہ چارٹر اکاؤنٹنٹ کے امتحان میں بھی فیل ہو چکی ہے۔